اردو معلی copy
(ہمارا نصب العین ، ادب اثاثہ کا تحفظ)

ضبط کرنے والے بھی

ضبط کرنے والے بھی

کیا کمال ہوتے ہیں

 

خواہشوں کے چنگل سے

کون بچ کے نکلا ہے

 

دل کو شاد رکھتی ہے

بے سبب اداسی بھی

 

بہہ گیا ہے جانے کیوں

ضبط میری آنکھوں سے

 

میں جہاں بھی رہتا ہوں

بے شمار رہتا ہوں

 

تم اداس رہنے میں

کیوں بلا کے ماہر ہو؟

 

دیکھ تیرا چہرہ بھی

خواب میں سلامت ہے

 

لوگ ہی تو کہتے ہیں

تُو گلے بھی ملتا ہے

 

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے
Share on facebook
Share on twitter
Share on whatsapp
Share on telegram
Share on email
لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ

اردوئے معلیٰ

پر

خوش آمدید!

گوشے

متعلقہ اشاعتیں

اگر سزا ہے مقدر تو کیا جزا کی طلب!
بے بسی کے شہر میں ہم زندگی سے تنگ ہیں
یہی دعا ہے رہیں سبز ہی ترے موسم
اُس نے اتنا تو کرلیا ہوتا
جسم سے روح کا جدا ہونا
دیکھ رہا تھا ہنستی کھیلتی آنکھوں کو
کسے معلوم کیسا ہے کسی کھوئے ہوئے کا غم
قدم قدم تے پِیڑ وے عشقا
دکھ تماشا لگائے رکھتا ہے
میرے سارے موسم تم ہو