محمد کا حُسن و جمال اللہ اللہ

محمد کا حُسن و جمال اللہ اللہ

وہ اک پیکرِ بے مثال اللہ اللہ

 

نہ اُن سے کوئی خوبرو دو جہاں میں

نہ اُن سا کوئی خوش خصال اللہ اللہ

 

خدا کا ہوا اور مہماں نہ کوئی

یہ عظمت یہ رُتبہ کمال اللہ اللہ

 

ہے زیرِ نگیں سطوتِ ہر دو عالم

مُحمد کا رُعب و جلال اللہ اللہ

 

بُتانِ عرب پہ ہوا طاری لرزہ

اذاں دے رہے ہیں بلال اللہ اللہ

 

ثنا خوانی مصطفے کی بدولت

ظہوریؔ بنے شیریں مقال اللہ اللہ​

 

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے

اشتہارات

لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ