اردوئے معلیٰ

Search

میں تو جا کے مانگوں گا یہ دعا مدینے میں

زندگی کی ہو جائے انتہا مدینے میں

 

محو خواب راحت ہیں مصطفیٰ مدینے میں

ہاں ذرا ادب سے چل اے ہوا مدینے میں

 

گلستان طیبہ کی دلکشی کا کیا کہنا

دیکھنی ہے جنت تو دیکھنا مدینے میں

 

جس کی دیدہ زیبی پر رشک خلد کو بھی ہے

آکے دیکھ اے رضواں وہ فضا مدینے میں

 

جو وہاں سے لوٹ آیا بیقرار ہے اب بھی

خوش نصیب ہے جو بھی رہ گیا مدینے میں

 

کاش ان کے سائے میں بیٹھنا میسر ہو

باغ ہیں کھجوروں کے خوشنما مدینے میں

 

مجھ کو غم کے طوفاں سے وہ بچاتے رہتے ہیں

ہیں مرے سفینے کے ناخدا مدینے میں

 

کاش میرے دامن کے داغ کو بھی دھو ڈالے

رحمتوں کی چھائی ہے جو گھٹا مدینے میں

 

کیوں نہ جاکے اے سرورؔ ہم وہیں پہ رہ جاتے

ہے ہماری بخشش کا آسرا مدینے میں

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے
لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ