نقشِ پا اُن ﷺ کا لا کلام تمام

نقشِ پا اُن ﷺ کا لا کلام تمام

اور سارے نقوش خام تمام

 

نور جن ﷺ کا ہے اَوّلیں تخلیق

کائنات ان ﷺ کا فیضِ عام، تمام

 

تھا تو پیغام ہر نبی علیہ السلام کا وہی

اُن ﷺ پہ ہونا تھا یہ نظام تمام

 

راہِ دیں پر ہر اک رسول چلا

مصطفیٰ ﷺ نے کیا خِرام تمام

 

آپ ﷺ نے در گزر کا درس دیا

عفو کی، رسمِ انتقام تمام

 

روشنی کے منار ہیں بیشک

اُن ﷺ کے اصحابؓ خاص و عام تمام

 

اُسوۂ مصطفیٰ ﷺ کو اپنا کر

ہو گئے فائز المرام تمام

 

پیرویٔ رسول ﷺ میں جو مٹے

ہیں رہِ عشق کے امام تمام

 

آرزو صرف ایک باقی ہے

اُن ﷺ کی دہلیز پر ہو کام تمام

 

نعت اُن ﷺ کی اُنہیں سناتے ہوئے

کاش ہو جائے یہ غلام تمام

 

آپ ﷺ کے فیض مکرمت سے ہوئی

نسلِ آدم ذوالاحترام تمام

 

پیروی جن ﷺ کی فرض ہے احسنؔ

اُن ﷺ کی مدحت پہ ہو کلام تمام

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے
Share on facebook
Share on twitter
Share on whatsapp
Share on telegram
Share on email
لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ

اردوئے معلیٰ

پر

خوش آمدید!

گوشے

متعلقہ اشاعتیں

ہر درد کی دوا ہے صلَ علیٰ محمد
مرحبا سید مکی مدنی العربی
رسولِ پاک کی سیرت سے روشنی پا کر
بزمِ رسولِ پاک سجانے کا وقت ہے
سوال ، لمحہ وہ کون سا تھا کہ جب یہ دونوں جہان مہکے
ارض و سما کی بزم میں، ہوتا مرا بھی نام خاص
نورِ حق نے اس طرح پیکر سنوارا نور کا
حبیب ربُّ العلا محمد شفیعِ روزِ جزا محمد
خاک جب اس پیکرِ نوری کا مدفن ہو گئی
توفیقِ ثنا جو مل رہی ہے