اردوئے معلیٰ

ہر لفظ کہہ رہا ہے مقدّس کتاب کا

رحمٰن ہے ثنا خواں رسالت مآب کا

 

جن خوابوں میں آتے ہیں نظر سیّدِ عالم

میں منتظر ہوں برسوں سے ایسے ہی خواب کا

 

لگ جائے گر مرض تو شفائیں عطا کرے

کیا معجزہ ہے مومنو اُن کے لعاب کا

 

توحیدِ خداوندی کی تشہیر ہو گئی

کتنا اثر ہے دیکھیئے اُن کے خطاب کا

 

رعنائیاں ہیں اُن کے تبسم سے ہر طرف

چہرے سے نور نجم و مہ و آفتاب کا

 

صلِّ علیٰ کا نور جو چمکا جہان میں

قصہ تمام ہو گیا ظلمت کے باب کا

 

صد شکر میں تو پیارے نبی کا غلام ہوں

صدیق کا ، عمر کا ، غنی ، بوتراب کا

 

میزاں کی سمت آ رہے ہیں شافعء اُمم

دل سے نکال ڈال رضاؔ ڈر عذاب کا

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے

اشتہارات

لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ

اردوئے معلیٰ

پر

خوش آمدید!

گوشے۔۔۔

حالیہ اشاعتیں

اشتہارات

اشتہارات