اردوئے معلیٰ

Search

ہے عرش پہ قوسین کی جائے محمد

رشک ید بیضا ہے کف پائے محمد

 

عیسیٰؑ سے ہے بڑھ کر لب گویائے محمد

یوسفؑ سے بڑھ کر رخ زیبائے محمد

 

والشمس تھے رخسار تو واللیل تھیں زلفیں

اک نور کا سورہ تھا سراپائے محمد

 

اندھیر ہوا کفر کا سب دور جہاں سے

روشن ہوا عالم جو یہاں آئے محمد

 

عصیاں سے بری ہو کے قیامت میں اٹھے گا

بے شک ہے بہشتی جو ہے شیدائے محمد

 

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے
لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ