اردوئے معلیٰ

تری خوشبو مری روح میں دَر آئی ہے

تری خوشبو مری روح میں دَر آئی ہے

پھول کی پتی پہ شبنم سی اُتر آئی ہے

شب کی تنہائی میں یادوں کی ہے سرگوشی سی

گھپ اندھیرے میں دبے پاؤں سحر آئی ہے

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے

اشتہارات

لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ