حُسن لاجواب آپ کا

حُسن لاجواب آپ کا

جسم ہے گُلاب آپ کا

 

مَہ جبیں ہیں آپ یا نبی

رُخ ہے آفتاب آپ کا

 

رونقِ جہانِ ہَست و بُود

رَشکِ کُل شباب آپ کا

 

راحتِ جہاں بھی، جان بھی

تذکرہ جناب آپ کا

 

رحمتہ اللعالمین بھی

خوب ہے خطاب آپ کا

 

مِل رہا ہے جو، جسے، جہاں

پاک ہے نصاب آپ کا

 

دَردِ لادَوا ہو یا مَرَض

شافی ہے لُعاب آپ کا

 

ہے رضاؔ پہ سایہء کرم

فیض بے حساب آپ کا

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے
Share on facebook
Share on twitter
Share on whatsapp
Share on telegram
Share on email
لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ

اردوئے معلیٰ

پر

خوش آمدید!

گوشے

متعلقہ اشاعتیں

ان کی نگاہ لطف کا سایہ نظر میں ہے
رہ خیر الوری میں روشنی ہے
اے شہ انس و جاں جمال جمیل
ہمیں وہ اپنا کہتے ہیں محبت ہوتو ایسی ہو
تمنا ، آرزو حسرت مرے سینے میں رہتی ہے
کیا ذکر محمد نے تسکین دلائی ہے!
کارِ دشوار
دُعا کا آسمان
کون پانی کو اڑاتا ہے ہوا کے دوش پر​
امین فرش پہ پیغام لے کے آیا ہے