اردوئے معلیٰ

مجھے آپ سے جو محبت نہ ہوتی

 

مجھے آپ سے جو محبت نہ ہوتی

زمانے میں یوں میری شہرت نہ ہوتی

 

ثنا خوان ہوں آپ کا میرے آقا

وگرنہ مری ایسے عزت نہ ہوتی

 

ملا ہے یہ سب آپ کے واسطے سے

نہ قرآن ہوتا ، تلاوت نہ ہوتی

 

اگر آپ مبعوث ہوتے نہ ہم پر

جہاں میں خدا کی عبادت نہ ہوتی

 

پجاری تھی دنیا شجر ، پتھروں کی

نہ آتے اگر آپ وحدت نہ ہوتی

 

مرے آپ ہیں اور میں آپ کا ہوں

ہوں جب آپ کا ، کیوں عنایت نہ ہوتی

 

اگر نعت کہتا نہ صلِّی علیٰ میں

تو شاعر نہ ہوتا ، سعادت نہ ہوتی

 

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے

اشتہارات

لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ