اردوئے معلیٰ

Search

وجہِ ظہورِ کائنات آئینۂ جمالِ ذات

چمکی ترے وجود سے تقدیرِ بزمِ ممکنات

 

نوعِ بشر سے انتساب لیکن ملائکہ صفات

مطلوبِ اہلِ دوجہاں محبوبِ ربِ کائنات

 

امرِ مسلّمہ ہے یہ من جملۂ مسلمات

تیرا وجودِ پاک ہے مستجمعِ ہمہ صفات

 

تاریکیوں میں تھا نہاں روئے جہانِ بے ثبات

تیرے قدم سے مستنیر آخر ہوئے یہ شش جہات

 

تیرا عروج بے مثیل اللہ رے وہ ایک رات

چرخِ کبود سے پرے جلوہ گہ حریمِ ذات

 

مژدہ برائے مومنیں مژدہ برائے مومنات

اُم الکتاب ہے تری گنجینۂ الٰہیات

 

تو ہے رسولِ آخری تو ہے پیمبرِ زماں

تیری ہی پیروی میں ہے اہلِ جہاں کی اب نجات

 

تیری صدائے لا الٰہ غارت گرِ بتانِ سنگ

تیری اذاں سے سر بخاک عزّیٰ ہبل منات و لات

 

ساحلِ امن و عافیت اس کو ملا ترے طفیل

طوفاں میں ورنہ تھا گھرا اپنا سفینۂ حیات

 

تو نے سکھا دیے ہمیں آدابِ بندگی تمام

تو نے بتا دیے ہمیں دنیا و دیں کے سب نکات

 

ایماں فروز و جاں نواز جنت نگار و جلوہ بار

روضہ کی سرزمینِ پاک سر چشمۂ تجلیات

 

دل کی سیاہیاں ہوں دور پڑھ اے نظرؔ بہ احترام

ان پر ہزار ہا سلام ان پر ہزار ہا صلوٰت

 

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے
لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ