اردوئے معلیٰ

Search

 

یا ایّھَُا النّبی وَ یا ایّھَُا الرّسول

کرتا ہوں پیش نعت کے خدمت میں چند پھول

 

تجھ پر ہی منتہی ہے نبوت کا کارِ طول

اللہ کی طرف سے ہے تو آخری رسول

 

محبوبِ کبریا ہے تو اے والدِ بتولؓ

تیرے دعا قبول تری بد دعا قبول

 

سکھلا دیے بشر کو سب آدابِ زندگی

بتلا دیے ہیں دینِ ہدیٰ کے اسے اصول

 

کیا دلنشیں ہے آپ کا اندازِ گفتگو

لگتا ہے اس طرح سے کہ جھڑتے ہیں منہ سے پھول

 

تجھ کو ملا شفاعتِ کبریٰ کا مرتبہ

جنت کی ہو گئی ہمیں آساں رہِ حصول

 

آرام گاہِ شاہِ مدینہ ہے جس جگہ

ہوتا ہے رحمتوں کا خدا کی وہاں نزول

 

اب آ بھی جائے کوچۂ دلدار سامنے

راہِ سفر طویل تمنائے دل عجول

 

اک آرزو ہے دل میں جو کہتا ہو برملا

مل جائے میری خاک میں پاؤں کی ان کے دھول

 

‘بعد از خدا بزرگ توئی قصہ مختصر’

کیا فائدہ کہ بات کریں ہم طویل و طول

 

اتنا ہی ملتمس ہے نظرؔ آپ سے شہا

کر لیجئے کا بہرِ شفاعت اسے قبول

 

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے
لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ