اردوئے معلیٰ

Search

اَبجدِ کَون میں ہے جلوۂ انوارِ اَلِف

نقطہ نقطہ ہے یہاں مست بہ اَسرارِ اَلِف

 

ہر خطِ دائرہ کِھنچتا ہے اُسی کی جانب

ناز اَنداز لیے چلتی ہے پَرکارِ اَلِف

 

معنی و حرف کا یہ ربطِ عیاں اور نہاں

سب کا مَرجَع ہے فقط حُسنِ طَرَح دارِ اَلِف

 

اِس کا ہی رَنگ ہے پھیلا سرِ قرطاسِ حُدوث

گم ہے ہر شکل در الوانِ قِدَـم زارِ اَلِف

 

اِک طرف ہیئتِ آتش میں تغیّر دیکھا

اِک طرف عشق سرِ دار گرفتارِ اَلِف

 

کوئی ہو جلوہ اِدھر روئے صفاتِ ازَلی

اب تو نظروں سے ہٹے پردۂ دیوارِ اَلِف

 

یہی ناؤ ہے، یہی ساحلِ اثبات و نفی

ہم تو ہیں شورشِ موّاجئی اَبحارِ اَلِف

 

اِس کی ہی نکہتِ دائم ہے وہی وردۂ میم

جس سے مقصودؔ مہکتا ہے یہ گلزارِ اَلِف

 

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے
لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ