اردو معلی copy
(ہمارا نصب العین ، ادب اثاثہ کا تحفظ)

تیرے ساتھ رہنے کا

تیرے ساتھ رہنے کا

سوچتا ہوں جانے کیوں

 

کچھ غریب لوگوں کو

درد بھی نہیں ملتے

 

آپ آئیں نہ آئیں

رات کٹ ہی جائے گی

 

درد بولنے والے

بات کیوں نہیں کرتے

 

لذتِ محبت کو

ہجر بھانپ لیتا ہے

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے
Share on facebook
Share on twitter
Share on whatsapp
Share on telegram
Share on email
لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ

اردوئے معلیٰ

پر

خوش آمدید!

گوشے

متعلقہ اشاعتیں

تو اداس کر یا اداس رہ، مرے پاس رہ
آپ نے ہاتھ کیا چھڑایا ہے
بے خبری کا موسم ہے
کیا مرے دکھ کی دوا لکھو گے
لفظوں میں مت کھویا کر
اگر سزا ہے مقدر تو کیا جزا کی طلب!
بے بسی کے شہر میں ہم زندگی سے تنگ ہیں
یہی دعا ہے رہیں سبز ہی ترے موسم
اُس نے اتنا تو کرلیا ہوتا
جسم سے روح کا جدا ہونا