اردوئے معلیٰ

!حُسن کو عیب سے خالی نہ سمجھیے ، صاحب

!دیکھیے، خود کو مثالی نہ سمجھیے، صاحب

 

در پہ آیا ہوا درویش بھی ہو سکتا ہے

!در پہ آئے کو سوالی نہ سجھیے، صاحب

 

عین ممکن ہے کہ اِک روز میں اُڑنے لگ جاؤں

!خوف کو بے پر و بالی نہ سمجھیے، صاحب

 

خود پہ گُذری ہے تو یہ شعر کہے ہیں میں نے

!اِن خیالوں کو خیالی نہ سمجھیے ، صاحب

 

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے

اشتہارات

لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ

اردوئے معلیٰ

پر

خوش آمدید!

گوشے۔۔۔

حالیہ اشاعتیں

اشتہارات

اشتہارات