اردوئے معلیٰ

Search

خدا اُس کا محافظ ہے جو ہے گلشن محمد کا

جلا سکتی نہیں بجلی کوئی، خرمن محمد کا

 

یہ وہ نعمت ہے ، جس کو حاصلِ دنیا و دیں کہیۓ

خدا شاہد ہے کافی ہے مجھے دامن محمد کا

 

حدیث عشق ہے یہ اس کو اہل دل سمجھتے ہیں

خدا کا ہے وہ دشمن جو کہ ہے دشمن محمد کا

 

مری بے اختیاری پر نہ جاؤ مجھ کو کافی ہے

لبوں پر نام اللہ ہاتھ میں دامن محمد کا

 

وہ صحرا تھا ، جسے بادِ خزاں تاراج کرتی تھی

بہارِ جاوداں ہے واقعی گلشن محمد کا

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے
لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ