خُدا کا ذِکر دِل میں، آنکھ نم ہے

خُدا کا ذِکر دِل میں، آنکھ نم ہے

خُدا کا لُطف پیہم ہے، کرم ہے

 

خُدا کی یاد سے دِل کھِل اُٹھا ہے

خوشی ہر سُو ہے، اب کوئی نہ غم ہے

 

وہی ہم دم ہے، دم سازِ غریباں

کرم فرما ہمیشہ، دم بدم ہے

 

وہ سیدھی رہ دکھائے گُمرہوں کو

گنہ گاروں کا بھی رکھتا بھرم ہے

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے

اشتہارات

لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ