اردوئے معلیٰ

Search

سرکار کے مدینے میں جانا ہے ایک دن

جا کر کبھی نہ لوٹ کے آنا ہے ایک دن

 

آنکھوں کو خاکِ پائے رسولِ کریم سے

یہ آرزُوئے دِل ہے سجانا ہے ایک دن

 

اللہ کے رسول کے دربار میں سبھی

اپنا یہ حالِ زار سُنانا ہے ایک دن

 

اُن کے دیارِ نور سے فیضانِ نور بھی

دِل کی جِلا کے واسطے پانا ہے ایک دن

 

ناموسِ مصطفی کی حفاظت کے واسطے

وقت آ گیا تو سر کو کٹانا ہے ایک دن

 

آقا کی جو بنائی ہے اُس رہ گزار پر

خود کو ہر اُمَّتی نے چلانا ہے ایک دن

 

جنت میں جاؤں گا میں کرم سے حضور کے

اِس بات پر بھروسہ ہے جانا ہے ایک دن

 

مقبول ہوں گے دیکھنا نغمے رضاؔ کے سب

بزمِ ثنائے آقا میں گانا ہے ایک دن

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے
لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ