اردوئے معلیٰ

وہ ورائے مکاں ماورائے گماں

وہ ورائے مکاں ماورائے گماں

ہر کسی کی صدا ہے وہی حکمراں

 

حمدِ لا حد کہوں اس کی ہر ہر گھڑی

مہکا مہکا اسی سے ہے سارا سماں

 

مالک و مولا وہ ہے وہی ہے احد

حکم اس کا رواں ہے کراں سے کراں

 

وہ احد ، وہ صمد ، اس کی حمدِ لا حد

اس کا ہم سر کہاں وہ ہے ہرسے کلاں

 

مالکِ کُل وہی اور وہی ہے الٰہ

اس لئے اسم اس کا ہے وردِ لساں

 

روگ کا ، درد کا ، سارے دکھوں کا رد

آسرا ہے اُسی کا اُسی کی اماں

 

سائلِ لا دوا کو عطا ہو کرم

درد سے دور حاصل ہو عمرِ رواں

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے

اشتہارات

لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ